Afkar Alvi New Urdu Poetry||Afkar Alvi Ki Urdu Shayari

Afkar Alvi New Urdu Poetry||Afkar Alvi Ki Urdu Shayari

Afkar Alvi New Urdu Poetry||Afkar Alvi Ki Urdu Shayari

مِری جان ! میں نے تو رو لیا ہے نکال لی ہے بھڑاس بھی

مری بے قراری اُسی طرح ، میں اُسی طرح ہوں اداس بھی


جونہی بات پہنچی فلک تلک ، مِری چھت زمین سے آ لگی

مِرا دُکھ سمجھ ! مِری ہڈّیوں سے اتر گیا مِرا ماس بھی 


مِرا غم بھی دوسروں جیسا تھا میں بتا سکا نہ منا سکا

بڑی بے سکونی رہی مجھے ، مرے غمگسار کے پاس بھی


بھلا عاشقی کا قصور کیا ، میں اگر نکھر نہیں پا رہا 

یہ تو اپنا اپنا نصیب ہے نہیں آتی سب کو یہ راس بھی


بڑے لوگ تھے جو ضرورتوں کی نذر ہوئے ، بڑے لوگ تھے

نہیں اب کسی بھی شمار میں ، رہے بے شماروں کے خاص بھی


میں بہت ہنسا ، مرے سامنے وہ بھی منہ چھپا کے گزر گیا

وہ بدل گیا ، مِرے سامنے جو بدل چکا ہے لباس بھی


اُسے سوچتا ہوں تو بدحواسی میں کوستا ہوں طلب کو میں

مِرے بس میں ہوتا تھا میں بھی ، میرے حواس بھی ، مِری پیاس بھی


افکار علوی

Post a Comment

To be published, comments must be reviewed by the administrator *

Previous Post Next Post
Post ADS 1
Post ADS 1