shero shayari urdu||urdu poetry by Raakib Mukhtar

urdu poetry by Raakib Mukhtar

 


مجھے وہ یاد ہی کچھ اس حساب سے آئی

کہ اس کے سینٹ کی خوشبو گلاب سے آئی


وہ آنکھیں چوم چکے تھے وہ ہونٹ چکھ لئے تھے

اسی لئے ہمیں بد بو شراب سے آئی


وبا نے قبریں بڑھائیں تو ہوش میں آئے

ہمیں سمجھ بھی خدائی عذاب سے آئی 


ہم اس کے امتی ہو کر بھی ترش کیونکر ہیں

مٹھاس شہد میں جس کے لعاب سے آئی 


 راکب مختار


Mujhy wo yaad hi Kuch es hisaab se aai

Keh us Kay sent ki khushbu gulaab se aai


Wo aankhen choom chukay that wo hont chakhh liey they

Esi liey hamen badboo sharaab se aai


Wabaa ne qabren barrhaaen to housh me aaey

Hmen samjh bhi khudaai azaab se aai


Hum us k ummati ho kar bhi tursh kiun kar Hain

Mithaas shehd me Jis k luaab se aai


Raakib Mukhtar

Post a Comment

To be published, comments must be reviewed by the administrator *

Previous Post Next Post
Post ADS 1
Post ADS 1