Waqat Ki Ro Main Nah Beh waqt ko Tahveel Main Rakh||Sad Urdu Poetry

 Waqat Ki Ro Main Nah Beh waqt ko Tahveel Main Rakh||Sad Urdu Poetry

Waqat Ki Ro Main Nah Beh waqt ko Tahveel Main Rakh||Sad Urdu Poetry

وقت کی رو میں نہ بہہ وقت کو تحویل میں رکھ 

عکسِ آئیندہ کے آئینے کو ۔۔۔۔۔۔۔۔ تمثیل میں رکھ 


کینوس پر بھی ذرا ۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ترکِ تعلق کو اُتار 

بے وفائی کو بھی تصویر کی تشکیل میں رکھ 


تیرے اشکوں سے نکل آئے ۔۔ کوئی دل کی صدا 

ایسے امکاں کو بھی جذبات کی ترسیل میں رکھ 


جو تری روح میں ۔ الہام کی لاتا ہے چہک 

اُس پرندے کی بھی آواز کو ترتیل مین رکھ 


تو نے سن لی شبِ رفتہ میں ۔۔ چراغوں کی فغاں 

اشک سورج کے بھی امروز کی تکمیل میں رکھ 


کاٹ کر رکھ دے اندھیروں کو درو بام سے جو 

نور کی تیغ بھی اک ۔۔۔۔۔ سینہ ء قندیل میں رکھ 


تیرا کردار کہانی میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نمایاں ہے مگر 

میرے آنسو بھی تو کردار کی تفصیل میں رکھ 


دل شہنشاہِ بدن ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ذہن وزیرِ تدبیر 

عشق میں خود کو شہنشاہ کی تحویل میں رکھ 


عسکرِ ہند کو جو پھینک دے ۔۔۔۔ گنگا میں کہیں 

ایسا طوفاں کوئی کشمیر کی ڈل جھیل میں رکھ 


                   جاوید احمد

Post a Comment

To be published, comments must be reviewed by the administrator *

Previous Post Next Post
Post ADS 1
Post ADS 1