Darya Safar Main Hai||Sad Poetry On Urdu By Arshad Shaheen

Darya Safar Main Hai||Sad Poetry On Urdu By Arshad Shaheen

Darya Safar Main Hai||Sad Poetry On Urdu By Arshad Shaheen

دریا سفر میں ہے۔۔نہ کنارا سفر میں ہے
ناؤ نہیں ،۔یہ سوچ کا دھارا سفر میں ہے

پُر پیچ راستوں کی۔۔۔۔۔۔ اذیت بجا مگر
سچ پوچھیے تو اپنا۔۔۔۔گزارا سفر میں ہے

ٹھوکر میں پاؤں کی ہے۔ہر اک رنجِ رہگزر
جب تک نصیب ساتھ تمھارا سفر میں ہے

منزل نشانِ راہ۔۔۔۔۔ رہے تو قدم قدم
ہر رنج ، ہر ملال ،۔۔۔ گوارا سفر میں ہے

سوچو تو آس پاس کی۔۔۔ہر شے تھمی ہوئی
دیکھو تو شہر سارے کا سارا۔سفر میں ہے

دشتِ بلا میں دھوپ کا۔احساس تک نہیں
کچھ ایسے دوستوں کا۔۔سہارا سفر میں ہے

شاہین ! کس سے حالِ دلِ زار اب کہیں؟
سنتے ہیں وہ بھی۔۔۔درد کا ماراسفر میں ہے
ارشد شاہین

Post a Comment

To be published, comments must be reviewed by the administrator *

Previous Post Next Post
Post ADS 1
Post ADS 1